Ask Ghamidi

A Community Driven Discussion Portal
To Ask, Answer, Share And Learn

Forums Forums Sources of Islam Quran 28:19

  • Quran 28:19

    Posted by Ahsan Ali on December 19, 2023 at 8:43 am

    Surat No 28 : سورة القصص – Ayat No 19
    فَلَمَّاۤ اَنۡ اَرَادَ اَنۡ یَّبۡطِشَ بِالَّذِیۡ ہُوَ عَدُوٌّ لَّہُمَا ۙ قَالَ یٰمُوۡسٰۤی اَتُرِیۡدُ اَنۡ تَقۡتُلَنِیۡ کَمَا قَتَلۡتَ نَفۡسًۢا بِالۡاَمۡسِ ٭ۖ اِنۡ تُرِیۡدُ اِلَّاۤ اَنۡ تَکُوۡنَ جَبَّارًا فِی الۡاَرۡضِ وَ مَا تُرِیۡدُ اَنۡ تَکُوۡنَ مِنَ الۡمُصۡلِحِیۡنَ ﴿۱۹﴾
    پھر جب موسی ( علیہ السلام ) نے ارادہ کیا کہ دشمن قوم کے آدمی پر حملہ کرے 28 تو وہ پکار اٹھا ” 29 اے موسی ( علیہ السلام ) ، کیا آج تو مجھے اسی طرح قتل کرنے لگا ہے جس طرح کل ایک شخص کو قتل کر چکا ہے ، تو اس ملک میں جبار بن کر رہنا چاہتا ہے ، اصلاح کرنا نہیں چاہتا ۔ ” Isko explain kardain q ke ek video mein sir Ghamidi ne ye bataya tha ke Nabi masoom hota hai

    Dr. Irfan Shahzad replied 3 weeks, 6 days ago 2 Members · 3 Replies
  • 3 Replies
  • Quran 28:19

    Dr. Irfan Shahzad updated 3 weeks, 6 days ago 2 Members · 3 Replies
  • Dr. Irfan Shahzad

    Scholar December 21, 2023 at 12:17 am

    نبی کی معصومیت صرف خدا سے تحصیل دین اور تبلیغ دین میں کسی کمی کوتاہی اور غلطی سے محفوظ ہونے سے متعلق ہوتی ہے۔ باقی معاملات میں اسے بھی کوشش کرنا ہوتی ہے کہ گناہ نہ ہو۔ معصومیت کا جو تصور بعد میں رائج ہوا کہ ان سے کسی بھی قسم کی کوئی غلطی یا گناہ نہیں ہو سکتا، یہ درست نہیں، البتہ انبیا جان بوجھ کر گناہ نہیں کرتے تھے۔

    • Ahsan Ali

      Member January 30, 2024 at 6:10 am

      @Irfan76

      Surat No 66 : سورة التحريم – Ayat No 1

      یٰۤاَیُّہَا النَّبِیُّ لِمَ تُحَرِّمُ مَاۤ اَحَلَّ اللّٰہُ لَکَ ۚ تَبۡتَغِیۡ مَرۡضَاتَ اَزۡوَاجِکَ ؕ وَ اللّٰہُ غَفُوۡرٌ رَّحِیۡمٌ ﴿۱﴾

      اے نبی ( صلی اللہ علیہ وسلم ) ، تم کیوں اس چیز کو حرام کرتے ہو جو اللہ نے تمہارے لیے حلال کی ہے1؟ ﴿کیا اس لیے کہ ﴾ تم اپنی بیویوں کی خوشی چاہتے ہو2؟ ۔ ۔ ۔ ۔ اللہ معاف کرنے والا اور رحم فرمانے والا ہے3 ۔

      Jesy ap ne kaha ke nabi jaanbuj kar koi gunah nahi karta to is ayat se toh ye wazeh ho raha k nabi ne halal chez ko haram karliya tha apne liye

      Is ko explain kardain k nabi ki masoomiyat se kiya murad hai .

  • Dr. Irfan Shahzad

    Scholar February 2, 2024 at 12:52 am

    ظاہر ہے کہ یہ گناہ کا کام نہیں۔ اپنے لیے کھانا ممنوع ٹھیرا لیا تھا، نہ کہ اسے مطلقا حرام قرار دے دیا تھا جو کہ خدا کا ڈومین ہے۔

    تاہم ان کی منصبی ذمہ داری کی نزاکت کا تقاضا تھا کہ وہ ایسا نہ کریں کیوں کہ ان کے پیروکار ان کی ہر بات میں انھیں فالو کرتے تھے۔

You must be logged in to reply.
Login | Register